Breaking News
Home / آرٹیکلز / حضرت عثمان غنی کے 10 ایسے اقوال جو جینا سکھا دیں۔

حضرت عثمان غنی کے 10 ایسے اقوال جو جینا سکھا دیں۔

تعجب ہے اس پر جو موت کو حق جانتا ہے اور پھر ہنستا ہے۔عجب ہے اس پر جو تقدیر کو پہچانتا ہے اور پھر جانے والی چیز کا غم کرتا ہے۔تعجب ہے اس پر جو حساب کو حق جانتا ہے اور پھر مال جمع کرتا ہے۔تعجب ہے اس پر جو دوزخ کو حق جانتا ہے اور پھر گناہ کرتا ہے۔تعجب ہے اس پر جو اللہ تعالیٰ کو حق جانتا ہے اور پھر غیروں کا ذکر کرتا ہے اور پھر ان پر بھروسہ رکھتا ہے۔تعجب ہے اس پر جو شیطان کو دشمن جانتا ہے، اور پھر اس کی اطاعت کرتا ہے۔ضائع ہے، وہ عالم جس سے علم کی بات نہ پوچھیں، وہ ہتھیار جس کو استعمال نہ کیا جائے، وہ مال جو کار خیر میں شروع نہ کیا جائے، وہ علم جس پر عمل نہ کیا جائے، وہ مسجد جس میں نماز نہ پڑھی جائے، وہ نماز جو مسجد میں نہ پڑھی جائے، وہ اچھی رائے جس کو قبول نہ کیا جائے، وہ مصحف جس کی تلاوت نہ کی جائے، وہ زاہد جو خواہش دنیا دل میں رکھے، وہ لمبی عمر جس میں آخرت کا توشہ نہ لیا جائے۔

بعض اوقات جرم معاف کرنا مجرم کو زیادہ خطرناک بنا دیتا ہے۔اے انسان! اللہ تعالیٰ نے تجھے اپنے لئے پیدا کیا ہے اور تو دوسروں کا ہونا چاہتا ہے۔عافیت کے نو حصے لوگوں سے الگ رہنے میں اور ایک حصہ ملنے میں ہے۔محب اللہ کو تنہائی محبوب ہوتی ہے۔تواضع کی کثرت نفاق کی نشانی اور عداوت کا پیش خیمہ ہے۔مت رکھ امید کسی سے مگر اپنے رب سے اور مت ڈر کسی سے مگر اپنے گناہ سے۔جس نے دنیا کو جس قدر پہچانا، اسی قدر اس سے بے رغبت ہوا۔باوجود نعمت و عافیت موجود ہونے کے زیادہ طلبی بھی شکوہ ہے۔علم بغیر عمل کے نفع دیتا ہے اور عمل بغیر علم کے فا ئدہ نہیں بخشتا۔اپنا بوجھ خلقت میں سے کسی پر نہ رکھ، خواہ کم ہو یا زیادہ۔ایک پرہیزگار فقیہہ شیطان پر ہزار عابد سے بھاری ہے۔دنیا وہ ہر کام ہے جس سے آخرت مقصود نہ ہو۔خاموشی غصے کا بہترین علاج ہے۔دوسروں کا بوجھ اٹھانا عابدوں کی عزت کا تتمہ ہے۔دنیا سرائے ہے جو آخرت کے مسافروں کے لئے وقف ہے۔ اپنا توشہ لے اور جو کچھ سرائے میں ہے، اس کا لالچ نہ کر۔زبان کی لغزش پاؤں کی لغزش سے بہت زیادہ خطرناک ہے۔فقیر کا ایک درہم صدقہ بہتر ہے غنی کے لاکھ درہم صدقہ سے۔اگر تو گناہ پر آمادہ ہے تو کوئی ایسا مقام تلاش کر جہاں خدا تعالیٰ نہ ہو۔بہتر ہے کہ دنیا تجھ کو گنہگار جانے بہ نسبت اس کے تو اللہ تعالیٰ کے نزدیک ریا کار ہو۔تونگروں کے ساتھ عالموں اور زاہدوں کی دوستی ریاکاری کی دلیل ہے۔ظالموں اور ان کے متعلقین سے معاملہ مت کر۔

جس خوشبو کا تجھے حق نہیں ہے۔ اس سے ناک بند کر لے کہ اس کی خوشبو بھی اس کی منفعت ہے۔اگر آنکھیں روشن ہیں تو ہر روز روزِ حشر ہے۔اُمرا کی تعریف کرنے سے بچ کہ ظالم کی تعریف سے غضب الٰہی نازل ہوتا ہے۔ترغیب دلانے کی نیت سے علانیہ صدقہ دینا خفیہ سے بہتر ہے۔اللہ تعالیٰ کو ہر وقت اپنے ساتھ سمجھنا افضل ترین ایمان ہے۔جو لوگ اللہ تعالیٰ سے صدق اور خلوص کے ساتھ معاملہ کرتے ہیں، وہ اس کے ماسوا سے ہرحالت میں نفرت کرتے ہیں۔جانور اپنے مالک کو پہچانتا ہے، لیکن انسان اپنے رب کو نہیں پہچانتا۔آپؓ کا قول ہے، حیا کے ساتھ تمام نیکیاں اور بے حیائی کے ساتھ تمام بدیاں وابستہ ہیں۔بدگو تین آدمیوں کو مجروح کرتا ہے۔ اول اپنے آپ کو، دوم جس کی برائی کرتا ہے، سوم جو اس کی برائی سنتا ہے۔اللہ ہم سب کا حامی وناصر ہو۔آمین

About admin

Check Also

کسی کے دل میں پیار ڈالنے کا خاص وظیفہ ایک بار یہ عمل کرلیں ہر کوئی آپ کی بات مانے گا

اس تحریر میں ایک ایسا عمل پیش کیا جارہا ہے جو کہ ان لوگوں کے …

Leave a Reply

Your email address will not be published.